ساینس تہ ٹکنالجی

ارتقایی تواریخہ روس نوین زو ذاژن ہنز تخلیق

س

نتھیٹک بیالوجی یتھ ترکیبی بیالوجی تہِ ؤنتھ ہیکو چھیہ لیبارٹری منز نوین، مصنوعی حیاتیاتی شکلن ہنز تخلیق کران۔ زندہ سیلن کتھہ پاٹھۍ چھہ جینیاتی مادہ شکل تہ عمل عطا کران، ٹیکنالوجی ہندِ ذریعہ یم تہِ معلومات اتھ سلسلس منز پتمین ترین دہلین دوران دستیاب سپدۍ، تمو کنۍ سپز سیلن ہنز پروگرامنگ ممکن تہ یہنزِ عملہِ پیٹھ تہِ سپد قابو ممکن۔ یعنی انجینیرنگ کہ ذریعہ چھہ موجودہ زو ذٲژن ہندس جینیاتی مادس ردوبدل ممکن تاکہ تم کرن بہتر پاٹھۍ کٲم۔ امہ علاوہ سپد یہ تہِ ممکن زِ زندگی ہنزہ نوِ تہ مصنوعی شکلہ ین مرتب کرنہ۔

رڈکشنسٹ بیالوجی ہنزِ کامیابی سیتۍ (پیچیدہ نظام سادہ جزن منز تقسیم کرنک عمل) — یمہ کنۍ زندگی ہندۍ بنیادی مالیکیولر میکانزم (سالماتی تعمل) معلوم سپدۍ، سیلہِ اندر کیمیایی ردعملن ہند فہرست بناونہ آو تہ جینوم ڈیکوڈ کرنہ آیہ ۔۔ چھہِ وۅنۍ محقق نہ صرف زندگی سمجھنچ کوشش کران بلکہ چھہِ یم مطلوب پاٹھۍ کارآمد زو ذٲژ بناونچ تہِ کوشش کران۔

 کینژن ویب سایٹن پیٹھ وۅنۍ دستیاب جینیاتی انجینیرنگ خاطرہ ڈی این اے یکۍ مختلف ماحولن منز کٲم کرن والۍ معیاری حصہ، بیو برکس یا حیاتیاتی جز چھہِ مرتب کٔرتھ پروگرام کرنہ یوان تاکہ زو ذٲژ گژھن مخصوص طریقہ عمل کرنس پیٹھ مجبور۔ امہ جینیاتی انجینیرنگ سیتۍ چھہ نوۍ ویکسین تہ ادویات تیار کرنس منز، بیمار ٹیشیو تندرست بناونس منز، گندہ آب صاف کرنس منز تہ غذا پیدہ کرنس منز تہِ مدد میلنک امکان۔ امہ مزید چھہِ امہ سیتۍ توانایی ہندۍ نوۍ، کاربن روس ذریعہ تیار کرنکۍ تہِ امکان۔

سنتھیٹک بیالوجی ہندۍ خطرہ تہ خدشہ

ییتہ سنتھیٹک بیالوجی ہندین فایدن ہنز کتھ سپدان چھیہ، تتہ چھہِ کینہہ خطرہ تہ خدشہ تہِ ظاہر کرنہ یوان۔ ساروے کھوتہ بوٚڈ خطرہ چھہ بیو ہتھیار بناونک تہ عام کرنک۔ یہ چھہ ممکن زِ نقصان دہ تہ مشکل علاج بیکٹیریا تہ وایرس یِن بناونہ تہ امہ مقصدہ خاطرہ ورتاونہ۔ زٲنتھ مٲنتھ نہ سہی، غلطی کنۍ تہِ ہیکن یم مصنوعی زو ذٲژ ماحولس منز یلہ گژھتھ تہ نقصان واتنٲوتھ، یمن پیٹھ قابو کرن دشوار آسہِ۔ کینژن چھہ انسانی تہ غیر انسانی جینن ہندین مقدارن ہندس ملاوٹس منز تہِ خطرہ باسان۔
سنتھیٹک بیالوجی منز چھہِ کلہم پاٹھۍ زہ طریقہ ٹاکارہ، یم زو ذٲژن نسبت تہ امہ تحقیقی علمہ کین مقصدن متعلق مختلف مفروضہ ظاہر کران چھہِ۔

اکھ ایپروچ (یتھ ڈی نووو یا باٹم اپ تہِ ونان چھہِ) چھہ بالکل نوِ قسمہ چہ سیلہ مصنوعی طور بناونچ کوشش کران۔ باسٹنس نزدیک سمتھ کالج کہ بیولاجیکل ساینس شعبکۍ پروفیسر رابرٹ ڈورِٹ چھہ امریکن ساینٹسٹ کس تازہ شمارس منز لیکھان زِ یہ ایپروچ چھہ یتھ بنیادی سوالس جواب ژھارنچ کوشش کران زِ سٲنس سیارس یا بییہ کنہِ سیارس پیٹھ کتھ حدس تام چھیہ زندگی ہندین بلڈنگ بلاکن ہنز کیمیا زندگی ہندِس ارتقاہس محدود کران؟

زندگی ہندِ ارتقاچہ متبادل شکلہ آسہ برونہہ خیالی تصور کرنہ یوان مگر پتمین دۅن دہلین دوران ہیوٚت ساینس دانو سنجیدگی سان دویمین سیارن پیٹھ زندہ نظامن ہنزن متبادل کیمیاہن تہ ترتیبن ہند مطالعہ کرُن۔ مریخ سیارس پیٹھ زندگی ہندۍ آثار ژھانڈنہ چہ خلا پیماہن ہنزِ تلاشہ سیتۍ تہ سٲنس شمسی نظامس منز امکانی طور قابل رہایش سیارن ہندس تعدادس ہریر گژھنہ سیتۍ ہریہہ امہ کوششہ ہنز تہِ اہمیت۔

رابرٹ ڈورِٹ چھہ ونان زِ اگر ارتقاہچ قابلیت تھاون وول نظام یعنی سیل بناونہ کین مفروضہ طریقن منز سانہِ زمینہِ پیٹھچ کنی معلوم زندگی اکوے طریقہ چھہ، تیلہ چھہِ اسۍ زندگی ہنزہ تم شکلہ نظرانداز کران یم سانہِ زمینہِ ہنزِ زندگی ہندۍ علامات چھیہ نہ تھاوان۔ سنتھیٹک بیالوجی ہندِ تازہ ترین تحقیقہ مطابق چھہ نہ زمینہِ پیٹھ فطری طور واقع سپدن وول جینیات اکوے ممکن دنیا۔

دویم ایپروچ (یعنی ٹاپ ڈاون طریقہ عمل) چھہ موجود سالماتی جزن ہندِ ہران روزونہِ فہرستہ منزہ ضرورتہ مطابق مخصوص زو ذٲژ بناونچ کوشش کران۔ امہ ایپروچکۍ مانن والۍ چھہِ ونان چونکہ زندہ نظام چھہِ مفصل طور سمجھنہ آمتۍ تہ بیان کرنہ آمتۍ، لہذا ہیکن ساینس دان مطلوب نتیجہ حاصل کرنہ خاطرہ تہ انسانی ضرورژن مدنظر یمن نظامن منز مخصوص تبدیلی کٔرتھ۔ مگر پروفیسر رابرٹ ڈورِٹ چھہ ونان زِ یمو ساینس دانو چھہ جینوم سیدۍ پاٹھۍ امہ کین جزن ہند کل مونمت، یعنی یم جز چھہِ ترکیبی زاننہ آمتۍ تہ یم چھہِ واقع سپدن والہِ ماحولہ نش خۅد مختار بہنز انٹیگرٹی تہ عملہِ فرضی طور قایم تھاوان۔ رابرٹ ڈورِٹ چھہ ونان اگر یژھ کتھ آسہِ ہے تیلہ ہیکہ ہن بیالوجی ہندۍ انجینیر مقصود جین ژٲرتھ تم اکس جینومس منز ترتیب دتھ تہ یتھہ پاٹھۍ اکھ زو ذاتھ بنٲوتھ یۅس نہ زانہہ پانے ارتقا پذیر سپزمژ آسہِ ہے۔ 

سنتھیٹک بیالوجی کوٚر یتھ حقیقتس تایید زِ زندگی ہنز یۅس شکل اسہِ برونہہ کنہِ چھیہ سۅ چھیہ واریاہو ممکن شکلو منزہ اکھ حاصل شدہ شکل۔ پروفیسر ڈورِٹ چھہ ونان زِ اسۍ ما گژھو ٲخرس بالکل نیو شروعاتی مادو سیتۍ مصنوعی سیل بناونس منز کامیاب تہ یہ بناونہ آمژ سیل ما ہیکہِ میٹابولک ردعملن ہند پیچیدہ نظام قایم کٔرتھ تہ ارتقا پذیر تہِ سپدتھ، مگر پروفیسر ڈورِٹس چھہ نہ باسان زِ یہ سورے کیا ہیکہِ تتھے پاٹھۍ کٔرتھ یتھہ پاٹھۍ موجود زندہ سیلہ کران چھیہ تکیازِ بیالوجی چھیہ نہ صرف انجینرنگ تہ زو ذٲژ چھیہ نہ مشینہِ ہندۍ پاٹھۍ صرف موجود جزن ہندۍ مرکب، بلکہ چھہ زندہ نظامن ہندِ خاطرہ ارتقایی تواریخ سیٹھا اہم۔ (م۔ر)۔  

Leave a Reply

Back to top button
%d bloggers like this: